Introduction

بسم اللہ الرحمن الرحیم قرآن کریم اور احادیث مبارکہ کی بناء پر امت مسلمہ کا قطعی اور متواترعقیدہ چلا آرہاہے کہ آنحضرت ﷺ خاتم النببیّن ( آخری نبی) ہیں۔ آپ ﷺ کے بعد کسی بھی شخص کو منصب نبوت پر فائز نہیں کیا جائیگا اور یہ کہ آنحضرت ﷺ کے بعد جو شخص بھی نبوت کو دعویٰ کرے گا وہ آپﷺ کے ارشاد کے مطابق کذاب اور دجال ہے۔ اسلامی تاریخ میں بہت سے طالع آزماؤں نے نبوت ورسالت اورمسیحیت ومہدویت کے دعوے کرکے سادہ لوح مسلمانوں کو اپنے جال میں پھنسانے کی کوشش کی ، گذشتہ صدی میں مرزاغلام احمدقادیانی نے بھی مسیحیت ، مہدویت اور نبوت کے بلند بانگ دعوے کئے اوراپنے جھوٹے دعووں کیلئے اس نے قرآن وحدیث کے بیشمار نصوص کی تاویل کی، انبیاء کرام علیہم السلام اور سلف صالحین کی توہین وتذلیل کی ، علمائے امت کو مغلظات سے نوازا۔امت مسلمہ کو کافر قرار دیا۔ امت کے تمام طبقے اس کے کفرپر متفق ہوئے۔ڈیڑھ سوسال کی جدوجہد کے بعد پاکستان کی قومی اسمبلی نے ایک متفقہ قانون پاس کرکے انہیں غیرمسلم اقلیت قرار دیا۔ مرزاغلام احمدقادیانی نے اپنے باطل دعووں کے حق میں بیشمار کتابیں تحریر کیں، جو باہمی تضادات سے بھری پڑی ہیں۔ یعنی مرزاصاحب کی تصانیف میں سب قسم کی باتیں پائی جاتی ہیں۔ایمان کی بھی ، کفرکی بھی۔ اسلام اور عیسائیت ، ہندومذہب اور مجوسیت سب کچھ ہے۔ جس وقت جس چیز کی ضرورت ہو ئی نکال کر پیش کردی ۔ جہاں ضرورت پیش آئی مرزاصاحب کو مجدد اور ملہم من اللہ بتلادیا، جہاں کچھ گنجائش ملی وہاں مرزاصاحب کو ظلی اور بروزی نبی بتلایا، اورجہاں احباب خاص کا مجمع ہوا وہاں مرزاصاحب کو مستقل اور صاحب شریعت نبی بتلادیا۔ جہاں ہندووں کا مجمع ہوا وہاں مرزا صاحب کوکرشن بتلادیا۔ کبھی مذکرہوگئے کبھی حاملہ اور حائضہ عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام ختم نبوت آن لائن کورس کا اجراء کیا گیاہے۔ یہاں آپ کومستند انداز میں قادیانی مذہب سے آگاہی حاصل کرنے کا موقع ملے گا۔ ہمیں امید ہے کہ اس سے استفادہ کریں گے اور اس کی بہتری کیلئے تجاویز دیں گے۔

Recent Post